خوشی اور غمی کے ذریعے بندوں کی آزمائش ہوتی رہیگی، امام حرم کعبہ مسلمانوں کیلئےاہم پیغام

مکہ مکرمہ(پی کےنیوز)مسجد الحرام کے امام وخطیب شیخ ڈاکٹر خالد الغامدی نے واضح کیا ہے کہ اللہ تبارک و تعالی خوشی اور غمی دے کر بندوں کو آزماتا ہے،ماضی میں بھی اللہ تعالی نے اپنے بندوں کو اس حوالے سے امتحان میں ڈالا ہے، اب بھی ڈال رہا ہے اور قیامت تک ابتلا کا سلسلہ جاری رکھے گا۔ وہ ایمان افروز روحانی ماحول میں جمعہ کا خطبہ دے

رہے تھے۔ امام حرم نے کہاکہ تمام مسلمان صدقہ و خیرات اور اچھے بول بول کر دوزخ کے عذاب سے بچا کا اہتمام کریں۔ اللہ تعالی نے جنت کے راستے کو آزمائشوں اور مشکلات و مسائل سے گھیر دیا ہے جبکہ دوزخ کا راستہ نفسانی خواہشات کی ترغیب سے سجا رکھا ہے۔ یقین رکھئے کہ نیکی کبھی ضائع نہیں ہوتی۔ گناہ کا ریکارڈ کبھی نہیں مٹتا۔ فیاض ذات ہمیشہ سے ہے ، ہمیشہ رہے گی، جیسا کرو گے ویسا بھرو گے۔ اللہ سے ملاقات حتمی امر ہے۔ اما حرم نے بتایا کہ ہماری دنیا کا کوئی بھی انسان ایسا نہیں جو دو حالتوں سے نہ گزرتا ہو۔ یا تو نعمتوں اور خوشیوں سے نہال کر دیا جاتا ہے یا نعمتیں چھین کر غمی ، افسردگی ، محرومی اور کسمپرسی کی حالت سے دوچار ہو جاتاہے۔ یہ سلسلہ ازل میں شروع ہوا تھا ابد تک جاری رہے گا۔ اللہ تعالی قرآن پاک میں واضح کر چکا ہے کہ وہ انسانوں کو بدی اور بھلائی کی آزمائش میں ڈالتا رہے گا۔ کبھی خوشی ملے گی کبھی غم ملے گا۔ امام حرم نے کہا کہ اللہ تبارک و تعالی نعمتیں عطا کر کے انسان کو اظہار تشکر کا موقع دیتا ہے او رمصائب میں مبتلا کر کے صبر و تحمل کا اجر کمانے کی راہ ہموار کرتا ہے۔ جو لوگ آزمائشوں پر صبر اور عمل صالح کرتے ہیں اللہ تعالی ان کی مغفرت فرما دیتا ہے اور انہیں بڑے اجر سے

نوازے گا۔ اس اسلامی نظامکے تناظر میں سچا مومن ہر حال میں خوش رہتا ہے۔ خوشی ہو یا غم دونوں حالتوں میں اللہ تعالی سے تقرب مرد مومن کی شان ہوتی ہے۔ امام حرم نے بتایا کہ اللہ تعالی نے بندوں کو بہت ساری نعمتوں سے نواز رکھا ہے۔ دینی نعمتیں ، ایمانی بخششیں ، روحانی و اخلاقی عطیہ جات انمول ہیں۔ سب سے بڑی نعمت توحید و ایمان ، علم و بصیرت، دینی فقہ، اتحاد و اتفاق، الفت و مدوت اور قرآنو سنت سے گہری وابستگی کی صورت میں

عطا کی گئی ہیں۔ اللہ تعالی نے بندوں کو دنیوی نعمتوں سے بھی نہال کر رکھا ہے۔ دینی نعمت ہو یا دنیاوی نعمت ہو دونوں اللہ تعالی کی طرف سے ہوتی ہیں۔ وہی دیتا ہے وہی لیتا ہے۔ اللہ نے ہمیں امن و امان کی عظیم نعمت عطا کر رکھی ہے۔ اس پر شکر واجب ہے۔ امام حرم نے توجہ دلائی کہ پیغمبر اسلام صلی اللہ علیہ وسلم جو سیدالانبیاوالمرسلین اور خاتم الانبیاتھے۔ وہ بھی آزمائشوں میں مبتلا کئے گئے۔ اللہ تعالی نے اپنے بندوں سے کہا ہے کہ وہ آزمائش کو

اپنے لئے شر کی بجائے خیر سمجھیں۔ دوسری جانب مدینہ منورہ میں مسجد نبوی شریف کے امام و خطیب شیخ عبدالباری الثبیتی نے جمعہ کا خطبہ دیتے ہوئے کہا کہ اسلام نے بنی نو ع انسان کو امن وسلامتی اور اطمینان بخش زندگی کی نعمتیں عطا کر کے اعزازبخشا ہے۔ اسلام جامع شریعت ہے۔ اللہ تعالی نے دین اسلام کو کامل شکل میں بنی نوع انسان کے حوالے کیا

ہے۔