عمران خان نے جو کہا کردکھایا! تحریک انصاف نے شعبہ صحت میں تاریخ رقم کردی

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) پی ٹی آئی حکومت نے شعبہ صحت میں تاریخ رقم کر دی۔تفصیلات کے مطابق رواں ماہ وزیراعظم عمران خان نے ملک کے طول و عرض سے پولیو کے خاتمے کے لیے پانچ سالہ پلان کی منظوری دی تھی۔اور اب قومی پولیو مہم سے متعلق ڈبلیو ایچ او کی غیر جانبدار رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ گذشتہ قومی انسداد پولیو مہم تاریخ کی کامیاب ترین مہم ثابت ہوئی۔رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے ملکی تاریخ میں پہلی بار 98 فیصد بچوں کو پولیو کے خطرے پلائے گئے۔گذشتہ قومی پولیو مہم میں 2 فیصد بچے ویکسین سے محروم رہے،ڈبلیو رپورٹ کے مطابق پولیو مہم کا حصہ 93 فیصد بچوں کو انگلی پر تصدیقی نشان پائے گئے۔پنجاب م98.1، سندھ 97.8، بلوچستان

97.4 فیصد بچوں کو پولیو ویکسین پلائی گئی۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ فاٹا اضلاع کے 98.8 فیصد جی بی 99.2، آزاد کشمیر 97 فیصد بچوں میں پولیو ویکسینیشن کی تصدیق ہوئی جب کہ اسلام آباد میں 95.3 فیصد بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے گئے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ قومی پولیو ٹیم کی کارگردگی جانجنے کے لیے تھرڈ پارٹی سروے کروایا جاتا ہے۔خیال رہے وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا تھا کہ پاکستان پولیو زدہ ممالک کی فہرست میں رہنے کا مزید متحمل نہیں ہوسکتا، پنجاب کو 2019 تک پولیو فری صوبہ بنانا چاہتے ہیں، عالمی یوم انسداد پولیو 24 اکتوبر پر اپنے پیغام میں انہوں نے کہا کہ پولیو بچوں کے امراض میں سب سے مہلک بیماری ہے،پولیو سے پاک دنیا ہی ہمارے بچوں کے لئے محفوظ دنیا ہے۔وزیر صحت نے کہا کہ انسداد پولیو کے اہداف کا حصول تمام طبقوں کی شمولیت کے بغیر ممکن نہیں، اگلے ماہ پنجاب بھر میں ایک بار پھر انسداد پولیو مہم چلائی جائے گی، آئیے سب مل کے پولیو کا نام و نشان مٹا دیں۔ انہوں نے زور دیا کہ پولیو سے آگاہی کی بھی اتنی اہمیت ہے جتنی علاج کی ہے۔ ضلعی سطح پر تمام محکموں ، منتخب نمائندوں اور سول سوسائٹی کے تعاون سے والدین کو یہ پیغام دینا ہوگا کہ وہ ہر صورت میں اپنے 5سال سے کم عمر کے بچوں کو پولیو سے بچائو کی ویکیسن ضرور پلائیں۔