پی ایس ایل کی چھٹی ٹیم مل گئی تو نام کیا رکھوں گا، علی ترین نےشاندار اعلان کردیا

لاہور(نیوز ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی )کے رہنما جہانگیر ترین کے صاحبزادے علی ترین کا کہنا ہے کہ اگر انہیں پاکستان سپر لیگ کی چھٹی ٹیم خریدنے کا موقع ملا تو اس کا نام ملتان ہی رہنے دیں گے ۔ نجی ٹی وی سے انٹر ویو میں علی ترین کا کہنا تھا کہ وہ بچپن سے ہر طرح کے کھیل کھیلتے آئے ہیں اور جنوبی پنجاب میں کھیلوں کی ترقی کے لیے کام بھی کررہے ہیں ۔ان کا مزید کہنا تھا کہ جنوبی پنجاب سے کافی عرصے سے کوئی کھلاڑی قومی ٹیم میں شامل نہیں ہوا ہے اس لیے وہ اس خطے میں ایک بار پھر کھیلوں کے فروغ کے لیے کام کررہے ہیں ۔ یاد رہے کہ اس سے قبل نجی چینل سے بات کرتے ہوئے علی ترین نے تصدیق کی تھی کہ وہ پی ایس ایل

کےچوتھے ایڈیشن کے لیے فرنچائز خریدنا چاہتے ہیں اور اس سلسلے میں انہوں نے پی سی بی ہیڈکوارٹر لاہور میں آفیشلز سے دو سے تین ملاقاتیں بھی کی ہیں۔علی ترین نے کہا کہ وہ پی ایس ایل فور کے ٹینڈر کے لئے باقاعدہ درخواست دینے کے لئے ابتدائی کام مکمل کر چکے ہیں۔جہانگیر ترین کے فرزند علی ترین اس عزم کا اظہار کرچکے ہیں کہ اگر انہیں پی ایس ایل میں چھٹی ٹیم لینے کا موقع ملا تو وہ جنوبی پنجاب میں کرکٹ کے حوالے سے اب بھی کام کر رہے ہیں اور اس اقدام کے بعد مزید بہتر انداز میں ڈومیسٹک سطح پر کھیل کے فروغ کے لیے بہت کچھ کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔دوسری جانب پی ایس ایل میں کھلاڑیوں کے منیجر کی حیثیت سے کام کرنے والے عمران احمد خان نے بتایا کہ علی ترین نے پی سی بی سے چھٹی ٹیم کے حوالے سے ضرور بات کی ہے، البتہ چھٹی ٹیم کے مالک کا فیصلہ ٹینڈر کے ذریعے ہوگا جو دسمبر کے پہلے ہفتے میں جاری کر دیا جائے گا۔عمران احمد نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ آئندہ ماہ پی ایس ایل کی چھٹی ٹیم کے مالکانہ حقوق فروخت کردیے جائیں۔یاد رہے کہ پاکستان سپر لیگ کے تیسرے ایڈیشن میں شامل ہونے والی ‘ملتان سلطان’ 52 کروڑ میں فروخت ہوئی تھی، اس سال ڈرافٹ سے قبل پی سی بی کو بینک گارنٹی اور فرنچائز فیس نہ دینے کے باعث مالکانہ حقوق سے دست بردار ہو چکی ہے۔