میڈیکل کالج کے طالبعلم نے خودکشی کرلی، تحسین انجم اپنی وصیت میں ایسا کیا لکھ گیا کہ پڑھ کر ہرکوئی آبدیدہ ہوگیا

پشاور (نیوز ڈیسک) پشاور میں میڈیکل کالج کے طالب علم نے خود کشی کرلی، مردان کے رہائشی خیبر میڈیکل کالج کے سال آخر کے طالبعلم تحسین انجم نے اپنے آخری پیغام میں اپنے اعضا عطیہ کرنے کی تلقین کی۔ تفصیلات کے مطابق خیبر پختونخوا کے صوبائی دارالحکومت پشاورمیں خیبر میڈیکل کالج کے سال آخر کے طالبعلم تحسین انجم نے خود کشی کرلی ہے۔تعلیمی اداروں میں خودکشی کے واقعات میں روز بروز اضافہ ہو رہا ہے۔مردان کے رہائشی خیبر میڈیکل کالج کے سال آخر کے طالبعلم کی خود کشی پر تاحال کسی نے کوئی سنجیدہ نوٹس نہیں لیا۔ یونیورسٹی کے ڈین کا کہنا ہے کہ مذکورہ طالبعلم

کی خودکشی کی وجہ ذہنی تناؤ لگتی ہے تاہم کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہو گا۔ لاش کو پوسٹ مارٹم کے لیے اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔میڈیکل کے طالب علم تحسین انجم کے ہاسٹل کےکمرے سے ایک تحریر بھی ملی جس میں لکھا تھا کہ میں جوان ہوں، میرے اعضا عطیہ کر دیے جائیں۔ پولیس کے مطابق تحسین کے لواحقین کا کہنا ہے کہ تحسین کو کوئی نفسیاتی مسئلہ درپیش نہیں تھا جب کہ تحسین کے لیپ ٹاپ اور موبائل فون کا فرانزک معائنہ کیا جا رہا ہے تاہم فائنل انٹرنل امتحان میں کم نمبرلینا خودکشی کی وجہ ہوسکتی ہے۔ اطلاعات کے مطابق تحسین نے رات گئے اپنے کمرے میں پھندا ڈال کر خودکشی کی۔