مقبول بٹ شہید نے تحریک آزادی کشمیر کو امر کردیا، ان کی قربانی کو کبھی فراموش نہیں کیا جاسکتا، خولہ خان

اسلام آباد(پی کے نیوز) تحریک انصاف کی رہنما خولہ خان نے کہا ہے کہ مقبول بٹ شہید نے تحریک آزادی کو امر کردیا، مقبول بٹ نے ریاست جموں و کشمیر کی آزادی کا خواب دیکھا ، تحریک آزادی کو منظم کیا ، ببانگ دہل آزادی کے دشمنوں کو باور کرایا کہ یہ ملک ہمارا ہے، اس پر ہم حکومت کریں گے، مقبول بٹ نے ریاست کے ہر حصے کو جوڑنے کی کوشش کی اور تمام کشمیریوں کو آزادی کا شعور دیا، انہوں نے کرسی اور اقتدار کو جوتے کی نوک پر رکھا اور اپنی قوم کو آزادی اور سر اٹھا کرجینے کا فلسفہ دیا، قبول بٹ کو قتل کر کے بھارت نےاپنے نام نہاد جمہوری اور سیکولر چہرے پر جو کالک ملی تھی وہ کبھی نہ دھلے گی، ان کا کہنا تھا کہ آج کشمیری مقبول بٹ کی برسی کا دن تجدید عہد

کے ساتھ منا رہے ہیں، مقبول بٹ نے آزادی کشمیر کیلئے عظیم جدوجہد کی، بھارت دنیا کا واحد ملک ہے، جس نے لاشیں وارثین کے حوالے نہ کرنے کی روایت قائم کی ہے اور یہ اس کے بڑی جمہوریہ ہونے کے دعوے کو مزید ایکسپوز کرنے کا باعث بنی ہے، پینتیس سال گزرنے کے باوجود بھارت مقبول بٹ کی جسد خالی اہل خانہ کے حوالے کرنے کیلئے تیار نہیں، ان کا کہنا تھا کہ مقبول بٹ ایک بہادر اور باہمت حریت پسند تھے، جنہوں نے کشمیری قوم سے متعلق مفروضوں کو غلط ثابت کردیا اور صدیوں کی غلامی کے بعد، انہیں میدانِ عمل میں لاکھڑا کرنے کا عملی نمونہ پیش کیا، ان کا کہنا تھا کہ کشمیریوں کی تحریک فیصلہ کن مرحلے میں داخل ہوچکی ہے، کشمیر بھارت کے ہاتھ سے نکل چکا ہے۔