ہر طالبعلم کو ایک درخت لگانے کا پابند بنایا جائے ،طارق خان

اسلام آباد( پی کے نیوز) کلین اینڈ گرین پاکستان کے صدر طارق خان نے کہا ہے قدرتی ماحول کی حفاظت ہم سب کی ذمہ داری ہے ، درخت جہاں ماحول کی خوبصورتی کا سبب بنتے ہیں وہیں ہوا کو صاف رکھنے، آندھی اور طوفانوں کا زور کم کرنے، آبی کٹاؤ کو روکنے، آکسیجن میں اضافے اور آب و ہوا کے توازن برقرار رکھنے میں کلیدی کردار ادا کرتے ہیںپاکستان میں جنگلات تباہی کے دہانے پر ہیں لیکن اس پر سب خاموش ہیں، اگر ہم نے

جنگلات کی کٹائی کو نہ روکا اور جنگلات کے رقبے کو بڑھانے کے لئے کچھ نہیں سوچا تو ہر سال سیلابی تباہی بڑھتی جائے گی، انہوں نے تجویز دی کہ ہر جماعت کے طالبعلم کو اس وقت تک رزلٹ کارڈ نہ جاری کیا جائے جب تک وہ ایک درخت نہیں لگاتا، طارق خان کا کہنا تھا کہ نئی نسل میں شجرکاری سے متعلق شعور اجاگر کرنے کی ضرورت ہے، کلین اینڈ گرین نے نوجوان نسل میں شعور اجاگر کرنے کے لئے شجرکاری مہم شروع کی ہیں ، ایک مہم گرین برتھ ڈے کی ہے ، جسے کافی پذیرائی حاصل ہوئی ، ان کا کہنا تھا کہ کلین ایٖنڈ گرین محدود وسائل کے باوجود نوجوانوں میں شعور کی اگاہی کے حوالے سے کام کررہی ہے ، ان کا کہنا تھا کہ دوسرے ممالک میں درخت کاٹنے اور ماحول کو نقصان پہنچانے کے حوالے سے سخت سزائیں مختص ہیں ، لیکن پاکستا ن میں ایسا کچھ نہیں ، دوسرا بڑا مسئلہ پانی کا ہے ، اسلام آباد جیسے شہر کو بھی پانی کی قلت کا سامنا ہے ، اس کے لئے ضروری ہے کہ پانی کے ضیاع کو روکیں ، پاکستان میں 70فیصد سے زائد پانی ضائع ہوجاتا ہے جسے قابل استعمال بنانا وقت کی اہم ضرورت ہے،شہروں کے معاملے میں بھی ہم نے انتہائی لاپروائی اور مجرمانہ غفلت برتی ہے ‘شہروں کوبڑھنے سے روکنے کی بجائے حکومت کے ماتحت ادارے اس کار ’’خیر‘‘میں نہ صرف شامل ہیں بلکہ پرائیو ٹ ہاؤسنگ سوسائٹیوں کو کئی حدود پار کرنے میں ان کی معاونت بھی کی ہے، ترقی ناگزیر ہے

لیکن قدرتی ماحول کا تحفظ سب سے زیادہ ضروری ہے ، اگر ہم ترقی کے چکر میں اسی طرح اپنے ماحول کو تباہ کرتے رہے تو آنے والی نسلیں ہمیں کبھی معاف نہیں کریں گی