وزیراعظم عمران خان نے عالمی طاقتوں کے آگے گھٹنے ٹیک دیئے، دورہ ایران کے دوران ایسا کیا ہوا جس سے پاکستان کو شدید نقصان پہنچا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)پیپلز پارٹی کےچیئرمین بلاول بھٹو نے وزیراعظم عمران خان کو دورہ ایران کے بعد آڑے ہاتھوں لے لیا۔پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو کا ٹویٹ کرتے ہوئے کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان کے دورہ ایران پر گیس پائپ لائن منصوبوں سے متعلق کوئی اعلان نہیں کیا گیا۔ آصف زرداری کے ایران کے ساتھ طے گیس منصوبے کے تسلسل کا اعلان نہیں کیا۔گیس کی ضرورتیں بڑھ رہی ہیں اور قیمتوں میں بھی اضافہ ہو رہا ہے۔حکومت پاکستان کی ضرورتوں کی بجائے عالمی طاقتوں کے سامنے جھک گئی ہے۔اپوزشین جماعتیں وزیراعظم عمران خان کے دورہ ایران کے بعد خوب تنقید کر رہی ہیں۔پاکستان مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نواز نے بھی وزیراعظم

عمران خان کے ایران میں دئیے گئے بیان پر تنقید کی تھی۔پاکستان مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نواز کا کہنا ہے کہ وزیراعظم نے غیر ملک میں پاکستان کی شہرت کو نقصان پہنچایا۔کسی غیر ملکی رہنما کے ساتھ بیٹھ کر اس طرح کی گفتگو کی سفارتی تاریخ میں مثال نہیں ملتی۔تصور کریں ایرانی رہنما کیا سوچ رہے ہوں گے’ ملک کی سیاسی تاریخ میں آج تک کسی نے ایسا نہیں کیا۔ غیر ملکی قیادت کے سامنے ایسے بیان سے ملک کی بدنامی ہوئی۔خیال رہے وزیراعظم عمران خان نے ایران کا دورہ کیا تھا ۔تہران میں ایرانی صدر حسن روحانی کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ہم جانتے ہیں کہ ایران نے بھی دہشتگردی کا سامنا کیا ہے، ایران ان گروپس کی وجہ سے متاثر ہوا جو پاکستان کے اندر سے آپریٹ ہوتے رہے۔ سوشل میڈیا پر لوگوں نے وزیراعظم عمران خان کے بیان کو پاکستان مخالف بیان قرار دیا ہے۔سوشل میڈیا صارفین نے ایرانی صدر کے ہمراہ وزیراعظم عمران خان کے بیان کو انتہائی متنازع بیان کہا ہے ۔ سینئر صحافی طلعت حسین نے بھی وزیراعظم عمران خان کے بیان پر ٹویٹ کیا ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ میرے دورہ ایران کا مقصد دہشتگردی کا مسئلہ بھی ہے۔ دہشتگردی کی وجہ سے دونوں ممالک میں دوریاں پیدا ہوئیں۔ لیکن اب دونوں ممالک کو فاصلوں کو ختم کرنا چاہیے۔پاکستان نے دہشتگردی کی جنگ میں 70ہزار جانیں قربان کی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم پاکستان میں انقلاب لا رہے ہیں جس کا نام نیا پاکستان ہے۔ مزید برآں وزیراعظم عمران خان اور ایرانی صدر حسن روحانی نے مشترکہ پریس کانفرنس کی۔ اس موقع پر ایرانی صدر حسن روحانی نے کہا کہ دونوں ممالک کے تعلقات دیرینہ، ثقافتی اور مذہبی ہیں، وزیر اعظمپاکستان اور وفد کی آمد کے مشکور ہیں۔