ٹیوٹا موٹرز کے ڈیلر نے شہریوں کو بیوقوف بنادیا، 4ارب روپے کا فراڈ کرکے ملک سے فرار

گوجرانوالہ (مانیٹرنگ ڈیسک) ٹیوٹا گوجرانوالہ کا ڈیلر شہریوں سے 4ارب روپے کا فراڈ کرکے ملک سے فرارگیا ہو گیا۔ تفصیلات کے مطابق گوجرانوالہ ٹیوٹا موٹرز کا ڈیلر گاڑیاں بک کروانے کے بدلے میں شہریوں سے پیسے لیتا تھا اور انہیں گاڑیاں منگوا کر دیتا تھا اور شہری اس گاڑی پہ ملنے والے ’اون‘ کی رقم کے لالچ میں ایک سے زیادہ گاڑیاں بک کروا لیتے تھے، ڈیلر نے اسی لالچ کا فائدہ اٹھا کر شہریوں کو گاڑیان منگوا منگوا کر دیں اور ان کا اعتماد حاصل کیا اور اس چند ہفتے پہلے سینکڑوں گاڑیوں کی بکنگ کے ایڈوانس پیسے لے کر رفو چکر ہو گیا۔پاک وہیل ڈاٹ کام کے ترجمان نے بتایا ہے کہ اکثر شہری ’اون‘ کی مد میں حاصل ہونے والے منافے کے لالچ میں ایک سے زیادہ گاڑیاں بک کرواتے ہیں اور اس مقصد کے لیے وہ ٹیوٹا موٹرز کے نام چیک بنانے کی بجائے ڈیلر کے نام چیک بنا دیتے ہیں یا انہیں نقد رقم ادا کر

دیتے ہیں جبکہ یہ طریقہ غلط ہے ۔پاک وہیل ڈاٹ کام کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ کچھ لوگ یہ کہہ رہے ہیں کہ ٹیوٹا موٹرز نے یہ فراڈ کیا ہے لیکن ایسا نہیں ہے لوگوں نے پیسے کمپنی کو نہیں بلکہ ڈیلر کو دیے تھے اور ڈیلر فراڈ کر کے بھاگ گیا۔اس حوالے سے ایک وڈیو بھی سامنے آئی ہے جس میں کچھ متاثرہ شہریوں نے ٹیوٹا گوجرانوالہ کے شوروم میں داخل ہو کر گاڑیاں چھیننے کی کوشش کی اور تمام متاثرین نے ڈیلر کے خلاف ایف آئی آر درج کروا دی ہے۔پاک وہیل ڈاٹ کام کے ترجمان نے گاڑیاں بک کروا کر منگوانے کا صحیح طریقہ بھی بتایا ہے کہ جب بھی گاڑی بک کروانی ہو تو ہمیشہ رقم کا ڈرافٹ ٹیوٹا یا جس بھی کمپنی سے گاڑی خریدی جارہی ہو ان کے نام کا ڈرافٹ بنایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کسی بھی نقصان کی صورت میں کمپنی ذمہ دار ہو گی لیکن جو صورتحال ابھی پیش آئی ہے اس میں کمپنی ذمہ دار نہیں ہے۔