بائولرز کا شاندار کم بیک، محمد عامر کی تباہ کن بائولنگ نے آسٹریلوی بیٹنگ لائن کی دھجیاں اڑادیں

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)عالمی کپ 2019 کے 17 ویں میچ میں آسٹریلیا نے پاکستان کو جیت کے لئے 308 رنز کا ہدف دے دیا ہے، محمد عامر نے شاندار گیند بازی کا مظاہرہ کرتے ہوئے میچ میں پانچ کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔آسٹریلیا کی پوری ٹیم 49 ویں اوور میں 307 رنز بنا کر آوٹ ہو گئی، ٹونٹن میں کھیلے جانے والے اہم میچ پاکستان نے آسٹریلیا کے خلاف ٹاس جیت کر پہلے گیند بازی کا فیصلہ کیا ۔پاکستان کی جانب سے گیند بازی کا آغاز محمد عامر نے کیا جنہوں نے پہلا ہی اوور میڈن کروایا۔سرفراز نے اننگز کا دوسرا اوور شاہین شاہ کو دیا تاہم عامر کی جانب سے پہلے اوور میں بنائے گئے دباؤ کا وہ فائدہ نہیں اٹھا سکے، شاہین شاہ کو ڈیوڈ وارنر نے اوور میں ایک باؤنڈری رسید کی۔شاہین شاہ

نے اپنی اننگز کے تیسرے اوور میں انتہائی ناقص گیند بازی کا مظاہرہ کیا کپتان سرفراز کے سمجھانے کے باوجود انہوں نے شارٹ پچ گیند بازی جاری رکھی اور اوور میں 17 رنز دے دیئے۔آسٹریلیا کی سلامی جوڑی نے اننگز کا آغاز بہترین انداز میں کیا،پاکستان کو 12 ویں اوور میں پہلی وکٹ حاصل کرنے کا موقع ملا جو آصف علی نے گنوا دیا۔وہاب ریاض کی نپی تلی گیند بازی کا تسلسل جاری رہا،انہوں نے اننگز کے 14 ویں اوور میں ایرون فنچ کے خلاف ایل بی ڈبلیو کی اپیل کی ایمپائر نے فنچ کو ناٹ آؤٹ قرار دیا جس پر پاکستان نے فیصلے کے خلاف رویو حاصل کیا تاہم آسٹریلوی کپتان ناٹ آؤٹ قرار پائے۔آسٹریلیا کے کپتان ایرون فنچ کی جارحانہ بلے بازی محمد حفیظ کو ایک ہی اوور میں 15 رنز داغ دیے، دونوں کھلاڑیوں کے مابین سو رنز سے زائد کی شراکت داری قائم ہو چکی ہے۔ایک لمبی شراکت داری کے بعد اننگز کے 22 ویں اوور میں محمد عامر کی گیند پر ایرون فنچ کیچ دے بیٹھے انہوں نے 84 گیندوں پر 82 رنز کی بہترین اننگز کھیلی۔اسٹیو اسمتھ اور ڈیوڈ وارنر نے آسٹریلیا کی اننگز کو آگے بڑھایا، محمد عامر کی گیند پر ڈیوڈ وارنر کے خلاف ایل بی ڈبلیو کی اپیل کی گئی تاہم ایمپائر نے انہیں ناٹ آؤٹ قرار دیا اور رویو کرنے کے باوجود فیصلہ پاکستان کے خلاف آیا۔قومی ٹیم کی ناقص فیلڈنگ ، ڈراپ کیچز اور گیندبازوں کی جانب سے نو بالز پر آسٹریلیا کے بلے باز بھرپور فائدہ اٹھا رہے ہیں۔اننگز کے 28 ویں اوور میں پاکستان کو دوسری کامیابی حاصل ہوئی جب اسٹیو اسمتھ بڑی شاٹ کھیلتے ہوئے حفیظ کے ہاتھوں آؤٹ ہوئے، انہوں نے دس رنز اسکور کئے۔بھارت کے خلاف سلو اننگز کھیلنے والے ڈیوڈ وارنر کا بلا پاکستان کے خلاف خوب رنز اگلا اور وہ اپنی سینچری کی جانب گامزن ہیں۔دوسری طرف میکس ویل کی لاٹھی چارج کا

سلسلہ بھی جاری ہے انہوں نے حفیظ کو ایک ہی اوور میں 16 رنز داغ دیئے، میکس ویل کے بلے کو لگام ڈالنے کی غرض سے سرفراز نے شاہین شاہ کو گیند تھما دی۔شاہین شاہ نے قومی ٹیم کے کپتان کے اس فیصلے کو صحیح ثابت کرتے ہوئے میکس ویل کو کلین بولڈ کر دیا انہوں نے 20 رنز بنائے۔دوسری طرف ڈیوڈ وارنر نے بہترین اننگز کھیلتے ہوئے سنچری اسکور کی انہیں شاہین شاہ آفریدی نے آوٹ کیا، وارنر نے 111 گیندوں پر 107 رنز بنائے۔آسٹریلیا کی ٹیم کپتان ایرون فنچ اور ڈیوڈ وارنر کی عمدہ اننگز کا فائدہ اٹھانے میں ناکام رہی، پاکستانی گیند بازوں نے اننگز کے آخری اوورز میں بہت شاندار گیند بازی کا مظاہرہ کیا۔عامر، وہاب اور حسن علی نے نپی تلی باولنگ کے باعث آسٹریلیوی

بلے باز کھل کر رنز بنانے میں ناکام رہے، ناقص فیلڈنگ کے باوجود پاکستانی ٹیم نے میچ میں شاندار واپسی کی اور آسٹریلیا کو 307 رنز تک محدود کر دیا۔پاکستان کی جانب سے محمد عامر نے پانچ کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا، یہ پہلی مرتبہ ہے کہ عامر کسی ون ڈے میچ میں پانچ وکٹیں لینے میں کامیاب ہوئے۔عامر کے علاوہ شاہین شاہ نے دو حسن، وہاب اور حفیظ نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔اس موقع پر سرفراز کا کہنا تھا کہ یہ اچھی گرین وکٹ ہے جس پر کچھ گھاس بھی موجود ہے۔انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے ہم گزشتہ میچ نہیں کھیل پائے تھے لیکن ہم نے بہت محنت سے پریکٹس کی ہے۔آسٹریلوی کپتان ایرن فنچ کا کہنا تھا کہ اگر آسٹریلیا ٹاس جیت جاتا تو وہ بھی پہلے گیند بازی کرتا۔پاکستان کی

ٹیم میں ایک جبکہ آسٹریلیا کی ٹیم میں دو تبدیلیاں کی گئی ہیں۔آسٹریلیا کی قیادت ایرون فنچ کر رہے ہیں جبکہ دیگر کھلاڑیوں میں ڈیویڈ وارنر، عثمان خواجہ، اسٹیو اسمتھ، شان مارش، میکس ویل، ایلکس کیری، نیتھن کولٹرنائل، کمنز، مچ اسٹارک اور کین رچرڈسن شامل ہیں۔سرفراز احمد کی قیادت میں کھیلنے والی پاکستانی ٹیم میں فخر زمان، امام الحق، بابر اعظم، محمد حفیظ، شعیب ملک، آصف علی، وہاب ریاض، حسن علی ، شاہین شاہ آفریدی اور محمد عامر شامل ہیںقبل ازیں سری لنکا کے ساتھ میچ میں موسم نے رنگ میں بھنگ ڈالا اور کھیل بارش کے باعث شروع ہی نہ ہوسکا جس کے سبب پاکستان کو ایک ممکنہ پوائنٹ سے ہاتھ دھونے پڑے تھے۔ورلڈکپ 2019 کے جاری مقابلوں میں قومی ٹیم

نے اب تک تین میچ کھیل کر تین پوائنٹ حاصل کیے ہیں جس میں فتح اور شکست کا تناسب برابر رہا جبکہ ایک میچ بارش کی وجہ سے منسوخ ہوا۔پاکستان کا آغاز اچھا نہیں تھا اور پہلے ہی مقابلے میں ویسٹ انڈیز سے شکست ہوئی۔ اپنے دوسرے میچ میں پاکستان نے ٹائٹل فیورٹ انگلینڈ کو ہرا جب کہ سری لنکا کے ساتھ میچ میں بارش کی وجہ سے صرف ایک پوائنٹ مل سکا۔قومی ٹیم نے اب تک تین پوائنٹس حاصل کیے اور ٹیبل پر اسکی آٹھویں پوزیشن ہے۔ آج کا میچ جیت کر پاکستان اپنی پوزیشن بہتر بناکرآسٹریلیا کو مزید نیچے دھکیل سکتا ہے۔دوسری جانب آسٹریلیا پوائنٹس ٹیبل پر چوتھے نمبر کی ٹیم ہے جس نے تین میچ کھیل کر چار پوائنٹس حاصل کیے ہیں۔سابقہ میچ میں بھارت نے آسٹریلیا کو شکست دی تھی جب کہ افغانستان اور ویسٹ انڈیز کو ایرون فنچ الیون کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔آج کے میچ سے متعلق آسٹریلوی کپتان ایرون فنچ کا کہنا ہے کہ پاکستان ٹیم خطرناک حریف ہے، ہم اسے کمزور حریف تصور نہیں کرسکتے۔