اپوزیشن کے بعد حکومت کی باری!نیب نے وزیرجنگلات پنجاب سبطین خان کوگرفتار کرلیا

لاہور(نیوز ڈیسک) نیب نے وزیر جنگلات پنجاب سبطین خان کوگرفتار کرلیا ہے، سبطین خان پرچنیوٹ میں مائنیز کے ٹھیکے دینے کا الزام تھا، سبطین خان 2007ء میں بھی صوبائی وزیر معدنیات تھے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق نیب نے اپوزیشن رہنماؤں سابق آصف زرداری، فریال تالپور، اور حمزہ شہباز کے بعد اب حکومتی وزیر سبطین خان کو بھی گرفتار کرلیا ہے۔بتایا گیا ہے کہ سبطین خان پر2007ء میں چنیوٹ میں مائنیزکے ٹھیکہ کیس میں گرفتار کیا گیا ہے۔ سبطین خان 2007ء میں صوبائی وزیر معدنیات تھے۔ اس وقت پنجاب میں وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی تھے۔ نیب لاہور نے اپنے اعلامیے میں بتایا کہ سبطین خان نے2007ء میں بطورصوبائی وزیرغیرقانونی

طورپرمن پسند افراد کوٹھیکوں سے نوازا۔ای آرپی ایل کمپنی کوکان کنی کاتجربہ نہ ہونے کے باوجود کنٹریکٹ دیا گیا۔دیگرملزمان کی مدد سے ٹھیکہ ای آرپی ایل کوقوانین سے انحراف کرکے دیا گیا۔ ملزم نے میسرز ارتھ ریسورس پرائیویٹ لمیٹڈ کمپنی کوٹھیکہ دینے کے غیرقانونی احکامات دیئے۔ ہائیکورٹ کے کیس ریفرکرنے پرملزمان کیخلاف کارروائی کا آغازکیا۔ پنجاب مائنزکی صرف20 فیصد شراکت کے باعث یہ جوائنٹ وینچرغیرقانونی تھا۔ ملزمان کی جانب سے ایس ای سی پی کومنصوبے کی تفصیلات فراہم نہیں کی گئیں۔ملزم نے چنیوٹ کے اربوں مالیت کے معدنی وسائل25 لاکھ مالیت کی کمپنی کوفراہم کئے۔ دوسری جانب نیب نے سابق صدر آصف زرداری کی ہمشیرہ فریال تالپور کو جعلی اکاؤنٹ کیس میں گرفتار کرلیا ہے۔ گزشتہ رات چیئرمین نیب نے فریال تالپور کے وارنٹ گرفتاری پر دستخط کیے تھے۔ فریال تالپور کونیب آج اسلام آباد سے گرفتارکیا گیا ہے۔ فریال تالپور کا گھر19 اسٹریٹ 13 ایف 8ایٹ ٹو اسلام آباد میں واقع ہے۔بتایا گیا ہے کہ فریال تالپور کو جسمانی ریمانڈ لینے کیلئے کل احتساب عدالت میں پیش کیا جائے گا۔ اس سے قبل نیب نے اسلام آباد ہائیکورٹ سے ضمانت منسوخ ہونے کے بعد سابق صدر آصف زرداری کو گرفتار کیا تھا۔ اور لاہور ہائیکورٹ سے ضمانت منسوخ ہونے پر اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز کو گرفتار کیا تھا۔ تاہم اسلام آباد ہائیکورٹ نے جعلی اکاؤنٹس کیس میں آصف زرداری کی ہمشیرہ فریال تالپور کی ضمانت بھی منسوخ کردی تھی لیکن چیئرمین نیب نے آصف زرداری کے وارنٹ گرفتاری پر دستخط کیے تھے اور فریال تالپور کے وارنٹ جاری نہیں کیے تھے۔تاہم آج فریال تالپور کو بھی گرفتار کرلیا گیا ہے۔ اسی طرح احتساب عدالت کے جج محمد ارشد ملک نے نیب کی درخواست پر فیصلہ سنا دیا ہے۔ جس کے ساتھ نیب کو جوائنٹ وینچر کیس میں بھی آصف زرداری سے تفتیش کی اجازت مل گئی ہے۔