پاکستان کے سخت ردعمل کے بعد مودی سرکار کی عقل ٹھکانے آگئی،پاکستان سے کس چیز کی درخواستیں کرنے لگا، جانئے

راولپنڈی (نیوز ڈیسک) وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے شیخ رشید نے بھارت کی درخواست مسترد کردی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ بھارت کی جانب سے سمجھوتہ اور تھر ایکسپریس بحال کرنے کا مطالبہ مسترد کرتا ہوں۔ وفاقی وزیر ریلوے نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیر کی تحریک آزادی ایک بار پھر آہستہ آہستہ اٹھے گی، سرینگر میں بھارت کا سیاسی و معاشی جنازہ نکل جائے گا۔انہوں نے کہا کہ تمام پاکستانیوں سے کہتا ہوں جاگتے رہنا شاید ہمارا قرض اتارنے کا وقت آ گیا ہے جبکہ کشمیر کی جدوجہد آزادی میں لال حویلی کا ایک کردار ہے۔ شیخ رشید احمد نے کہا کہ سوچ سمجھ کر تھر اور سمجھوتہ

ایکسپریس بند کی ہے اور بھارتی وزارت خارجہ کی نظرثانی کی درخواست مسترد کرتا ہوں۔انہوں نے کہا کہ جب تک وہ وزیر ہیں سمجھوتہ اور تھر ایکسپریس نہیں چلے گی، بھارت سے مذاکرات کے سارے راستے بند ہو چکے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ مذاکرات ہوئے تو لوگ کہیں گے سب کچھ سوچے سمجھے منصوبے کے تحت ہو رہا ہے تاہم بھارت سے تعلقات میں نظرثانی کا فیصلہ وزارت خارجہ نے کرنا ہے۔ شیخ رشید نے کہا کہ ان کے خیال میں مودی حکومت ٹریپ ہو گئی ہے، مودی ازم ہٹلر کی کاپی اور نازی ازم کی داستان ہے، کشمیری جینئس قوم ہے مودی نے سیاسی خودکشی کا فیصلہ کیا، وقت ثابت کرے گا مودی کا فیصلہ بھارت کی معیشت اور امن کو تباہ کر دے گا۔انہوں نے کہا کہ ایران، ترکی، عربی سب کشمیر پر بولیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ سیکرٹری جنرل اقوام متحدہ نے کہا جو کچھ ہوا یو این قراردادوں کے خلاف ہے۔ خیال رہے کہ فاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے بھارت جانے والی سمجھوتی ایکسپریس بند کرنے کا اعلان کیا تھا جس کے بعد آج آخری سمجھوتہ ایکسپریس بھارت روانہ ہو گئی ہے اور مزید ٹرینیں نہیں چلیں گی۔گزشتہ روز وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید نے کہاتھا کہ بھارت کو اس کی ٹرین مسافروں سمیت واپس لے جانے کا کہہ دیا ہے۔ شیخ رشید نے کہا کہ یہ فیصلہ بھارتیاقدام کے جواب میں کیا ہے۔