سکول میں جشن آزادی کی تقریب مجراپارٹی میں تبدیل، تقریب میں طلبا اور مرد اساتذہ کی بڑی تعدادموجود

لاہور (نیوز ڈیسک)گذشتہ روز ملک بھر میں پاکستان کا 72 واں یوم جشن آزادی کشمیر سے یکجہتی کے طور پر قومی جوش و جذبے سے منایا گیا۔اسی سلسلے میں جشن آزادی کے موقع پر مختلف سکولوں میں تقاریب کا انعقاد کیا جاتا ہے۔تاہم سوشل میڈیا پر ایک سکول کی ویڈیو وائرل ہو رہی ہے جس میں بظاہر جشن آزادی کے موقع پر ایک تقریب رکھی گئی ہے۔اسٹیج پر قومی پرچم بھی لگایا گیا ہے۔کئی لوگ بھی سٹیج پر براجمان ہیں۔جب کہ اس کمرے کم عمر طلباء بھی بڑی تعداد میں ہیں۔تقریب کو دیکھ کر لگتا ہے کہ جیسے کوئی مجرا پارٹی ہو۔جشن آزادی کے موقع پر سکول میں کیا گیا یہ ڈانس سوشل میڈیا پر بھی وائرل ہو گیا ہے۔صارفین کی جانب سے سخت تنقید کی گئی ہے۔صارفین کا کہنا ہے کہ جشن آزادی کے موقع پر بچوں کو کیسی تربیت دی جا رہی ہے؟۔کیا اساتذہ کا کام

بچوں کو مجرا دکھانا ہے۔صارفین نے سکول انتظمایہ کے خلاف سخت کاروائی کا مطالبہ کیا گیا ۔بتایا گیا ہے کہ شاہد یہ گورنمنٹ ہائر سیکنڈری اسکول بھریاروڈ تعلقہ بھریا ضلع نوشہروفیروز ہے ۔۔خیال رہے گذشتہ روز چھوٹے بڑے شہروں میں بھی رنگا رنگ تقاریب منقعد ہوئی. مرکزی تقریب کا آغاز قومی و کشمیری پرچم کشائی، سلامی اور ملکی سلامتی و خوشحالی کی دعائیں مانگ کر اور پودے لگاکر کیا گیا.سکول میں ہونے والی تقاریب میں تقریب میں مختلف سکولوں کے بچوں نے ملی نغمے پیش کیے۔اور یہ پیغام دیا گیا کہ ملک کی سلامتی و خوشحالی کی خاطر پوری قوم متحد ہے جب بھی وطن عزیز کو ہماری ضرورت پڑے گی تو ہم اپنے خون کا آخری قطرہ دینے سے بھی گریز نہیں کریں گی. اس سال حکومت نے یوم آزادی کو کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے طورپر منائی۔