مودی کو متحدہ عرب امارات سے ایوارڈ ملنے کے بعدچیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کازبردست اقدام

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے پارلیمانی وفد کے ہمراہ اپنا دورہ یو اے ای منسوخ کرتے ہوئے بتایا کہ مودی کو ایوارڈ ملنے کے بعد یو اے ای جانا اور حکام سے ملنا مناسب نہیں تھا، فیصلے سے یو اے ای سفیر کو بھی آگاہ کر دیا ہے۔بھارتی وزیر اعظم مودی کے حالیہ دورہ یو اے ای کے پس منظرمیں چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ پاکستان کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کی بھرپور حمایت کرتا ہے، یہ نہیں ہوسکتا کہ کشمیری بہن بھائی محصورہوں اور یو اے ای کا دورہ کروں۔

چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ ان کا دورہ پہلے سے طے شدہ تھا اور 3 بجے ہماری پرواز تھی، انہوںنے کہاکہ مودی کشمیریوں پر مظالم ڈھائے اور اسے ایوارڈ دیا جائے اس پر دکھ ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ مودی حکومت کشمیری مسلمانوں پر ظلم و بربریت کر رہی ہے، مودی حکومت نے مقبوضہ کشمیر میں کرفیو نافذ کررکھا ہے، اِس موقع پرامارات کا دورہ کشمیریوں کی دل آزاری کا سبب بنے گا۔واضح رہے کہ صادق سنجرانی کو 4 روزہ سرکاری دورے کے لیے گزشتہ شب یو اے ای روانہ ہوناتھا۔