امریکن لائسٹف اسکول کے استاد کا طالبعلم پر بہیمانہ تشدد ، طالبعلم جاں بحق

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک)لاہور ميں سبق ياد نہ کرنے پر استاد کے مبينہ تشدد سے ميٹرک کا طالب علم جاں بحق ہوگيا، پوليس نے ملزم کو حراست ميں ليکر تحقيقات کا آغاز کرديا۔لاہور کے علاقے گلشن راوی ميں واقع امریکن لائسٹف اسکول ميں دسويں جماعت کے طالب علم حنين کے ساتھی طلباء اور ورثاء کا الزام ہے کہ کمپيوٹر کلاس ميں ٹيچر کامران نے سبق ياد نہ کرنے پر تشدد کا نشانہ بنايا، حالت غير ہونے پر اسپتال منتقل کيا گيا جہاں وہ زندگی کی بازی ہار گيا۔ایک طالبعلم کا کہنا ہے کہ جب استاد نے حنین کو مارنا شروع کیا تو اس نے کہا کہ مجھے کچھ ہورہا ہے، جس پر انہوں نے مزید مارتے ہوئے

کہا کہ تم ڈرامے کررہے ہو۔اہل خانہ اور دوستوں نے مطالبہ کیا ہے کہ حنین پر تشدد کرنیوالے ٹیچر کو کڑی سے کڑی سزا دی جائے۔پوليس نے حنين کی لاش کا پوسٹ مارٹم کرانے کا فیصلہ کرلیا، مبینہ تشدد میں ملوث استاد کو بھی حراست ميں لے ليا گیا ہے۔انچارج انویسٹی گیشن عمران پاشا کا کہنا ہے کہ فوری طور پر کارروائی کرتے ہوئے حالات پر قابو پایا اور ملزم کو حراست میں لے لیا، مزید کارروائی کیلئے بچے کا پوسٹ مارٹم کروا رہے ہیں۔پولیس کے مطابق طالبعلم کی گردن کے اوپری حصے پر تشدد کے نشانات ہیں، موت کی حتمی وجوہات کا تعین پوسٹ مارٹم رپورٹ کے بعد ہی ہوسکے گا۔