سوتیلی والدہ بغیر بتائے بابا کی میت لے گئیں‘ عابد علی کی بیٹی کی روتے ہوئے ویڈیو وائرل

کراچی (نیوز ڈیسک) لیجنڈ اداکار عابد علی 67 برس کی عمر میں انتقال کرگئے۔گذشتہ روز انتقال کرنے والے لیجنڈ اداکار عابد علی کی بیٹی راحمہ علی نے اپنی سوتیلی والدہ پر بغیر بتائے والد کی میت اپنے گھر لے جانے کا الزام لگایا ہے۔اس حوالے سے راحمہ علی نے ایک ویڈیو پیغام سوشل میڈیا پر جاری کیا جس میں انہوں نے کہا کہ میں دنیا کو یہ بتانا چاہتی ہوں کہ میرے والد کی دوسری اہلیہ رابعہ نورین ہمیں بغیر بتائے اسپتال سے میرے بابا کی میت لے کر چلی گئی ہیں۔میں میری ماں، اور میری بہنیں اور میرے پھوپھا پھوپھی سب اسپتال میں بے بس ہو کر بیٹھے ہیں اور رابعہ نورین نے میری پھوپھی سے کہا کہ یہ عورتیں یعنی عابد

علی کی بیٹیاں رابعہ میڈم کے گھر نہیں جا سکتیں،راحمہ علی نے مزید کہا کہ ہمیں یہ بھی نہیں معلوم کہ میرے والد کا نمازجنازہ کب ہو گا اور ان کی تدفین کہاں کی جائے گی۔کچھ سمجھ نہیں آ رہا اس مشکل کھڑی میں ہم کیا کریں۔ویڈیو پیغام میں راحمہ علی مسلسل رو رہی تھیں۔۔خیال رہے کہ گذشتہ رات عابد علی اس دنیا سے ہمیشہ کے لیے چلے گئے تھے۔عابد علی گذشتہ دو ماہ سے کراچی کے نجی ہسپتال میں زیر علاج تھے۔ عابد علی کا یرقان بگڑ گیا تھا اور وہ کئی روز سے وینٹی لیٹر پر تھے۔ 1985 میں عابد علی کو پرائڈ آف پارفامنس سے بھی نوازا گیا۔ خواہش، دشت، دوسرا آسمان، وارث اور مہندی عابد علی کے یادگار ڈرامے ہیں۔عابد علی نے آخری بار فلم ہیر مان میں اداکاری کے جوہر دکھائے۔ ٹیلی ویژن نگری میں شہرت کی بلندیوں کو چھونے والے صدارتی ایوارڈ یافتہ اداکار عابد علی 1952میں کوئٹہ میں پیدا ہوئے۔ان کی تین بیٹیاں ہیں۔بیٹی ایمان علی نے جیو کی فلم بول سے شہرت حاصل کی۔ان کی دو شادیاں ہیں۔پہلی بیگم حمیرا علی اور دوسری رابعہ نورین ہیں۔ان دونوں کا تعلق بھی شوبز سے ہے۔دریں اثناء گورنر سندھ عمران اسماعیل نے اداکار عابد علی کے انتقال پر گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ عابد علی کے انتقال سے ملک ایک عظیم فنکار سے محروم ہوگیا، عابد علی کے انتقال سے پیدا ہونے والا خلا کبھی پٴْر نہیں ہوگا۔ اللہ تعالیٰ عابد علی کے درجات بلند کرے اور اہلخانہ کو اس مشکل گھڑی میں صبر جمیل عطا کرے۔ وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے بھی معروف اداکار عابد علی کے انتقال پر گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مرحوم کا بہترین کام ہمیشہ یاد رکھا جائے گا، وزیر اعلیٰ سندھ نے مرحوم کی مغفرت کے لیے بھی دعا کی ہے۔