جاپان میں سمندری طوفان’ ہیگی بس ‘نے تباہی مچادی

ٹوکیو(نیوز ڈیسک) جاپان میں سمندری طوفان ہیگی بس سے ہلاکتوں کی تعداد 70ہوگئی، پندرہ تاحال لاپتہ ہیں، متاثرہ علاقوں میں ریسکیو آپریشن جاری ہے۔جاپانی میڈیا کے مطابق سمندری طوفان کے بعد سرچ آپریشن جاری ہے، ہلاکتوں کی تعداد ستر ہوگئی، ایک لاکھ اڑتیس ہزار افراد تک پانی جبکہ چوبیس ہزار تک بجلی کی سپلائی منقطع ہے۔متاثرہ علاقوں میں ہزاروں ریسکیو اہلکار لوگوں کی مدد کرنے میں مصروف ہیں تاہم مکمل بحالی میں کافی وقت درکار ہو گا۔ سمندری طوفان کے سبب موسلا دھار بارشوں کا سلسلہ بھی جاری ہے جس سے درياؤں ميں طغيانی کے باعث کانٹو اور کوشن کے علاقے سیلاب سے سب سے زيادہ متاثر ہوئے ہيں۔ ہزاروں افراد بے گھر ہو چکے ہیں جبکہ پہاڑی علاقوں

ميں لوگوں کی بڑی تعداد گھروں کی چھتوں پر محصور ہے۔جاپان کے دارالحکومت ٹوکیو کے جنوب مغربی علاقوں میں سمندری طوفان کےباعث چلنے والی تیز رفتار ہواؤں اور موسلادھاربارشوں نے نظامِ زندگی درہم برہم کر دی۔ درجنوں مکانات تباہ ہوگئے۔ سیکڑوں درخت اور درجنوں بجلی کے کھمبے اکھڑ گئے۔ حکومت نےساٹھ لاکھ افراد کوانخلا کاحکم جاری کردیا۔ چار لاکھ سے زائد افراد بجلی سے محروم ہوگئے۔ ریسکیو اہلکار ہیلی کاپٹر سےعوام کی مدد کرنے میں مصروف ہیں۔ حکام نے پروازیں اور ٹرین سروس معطل کر دیں۔خبررساں ایجسنی کےمطابق جزیرہ نما علاقے ایزو سے ٹکرانے کے بعد طوفان دو سوپچیس کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتارسے مشرقی ساحل کی جانب بڑھ رہا ہے۔