مکہ بس حادثہ ، خوفناک حادثے میں جاں بحق35افراد میں سے بیشترعمرہ زائرین کا تعلق پاکستان سے نکلا، تفصیلات سامنے آگئیں

مکہ(نیوز ڈیسک)سعودی عرب کے شہر مدینہ منورہ کے قریب بس حادثے کے نتیجے میں 35 زائرین جاں بحق اور 4 زخمی ہوگئے۔فرانسیسی خبررساں ادارے ‘اے ایف پی‘ کی رپورٹ کے مطابق سعودی پریس ایجنسی نے بتایا کہ مدینہ پولیس کے ترجمان کے مطابق حادثہ مدینہ منورہ سے 170 کلومیٹر کے فاصلے پر واقع حجرہ روڈ پر نجی بس مسافروں کو لے کر جارہی تھی کہ ایک لوڈر سے ٹکرا گئی۔ اس حوالے سے مزید تفصیلات سامنے آئی ہیں۔ عرب میڈیا کے مطابق اس حادثہ میں جاں بحق ہونے والے بیشتر عمرہ زائرین کا تعلق پاکستان سے ہے، اور باقی چند عرب زائرین تھے۔جن کی جلی ہوئی لاشیں مردہ خانوں میں منتقل کردی گئی ہیں۔تاہم ابھی تک اس حادثے میں جاں بحق ہونے والے پاکستانیوں کی صحیح تعداد ظاہر نہیں کی گئی۔عرب نیوز کے مطابق بس میں 39 افراد سوار تھے، جن میں سعودی عرب میں مقیم

ایشیائی اور عرب شہری بھی شامل تھے۔سعودی پریس ایجنسی نے مزید کہا کہ زخمیوں کو الحمنہ ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے اور حکام نے حادثے کی تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔سعودی خبررساں ادارے ’اردو نیوز ‘کی رپورٹ کے مطابق بس حادثے کی اطلاع ملتے ہی مدینہ منورہ کے گورنر شہزادہ فیصل بن سلمان نے تمام متعلقہ اداروں کو ہر ممکن سہولت فراہم کرنے اور واقعے کی وجوہات جاننے کے لیے ٹیم تشکیل دینے کی ہدایت کردی۔اس حوالے سے سعودی ہلال احمر نے کہا کہ ان کی 20 ٹیمیں جائے حادثہ پر پہنچ گئی تھیں جنہوں نے جاں بحق افراد کی لاشوں کو بس سے مردہ خانے منتقل کیا جبکہ زخمیوں کو ہسپتال پہنچایا۔ہلال احمر کا کہنا تھا کہ بس حادثہ 16 اکتوبر کی شب 18 بجکر 49 منٹ پر ہوا تھا اور جب ان کی امدادی ٹیمیں وہاں پہنچیں تو صرف 4 افراد زخمی تھے اور باقی مسافر جاں بحق ہوچکے تھے۔