میرے علاوہ ٹیم میں باقی سب میچ فکسر تھے، شعیب اختر کےبیان نے نیا تنازعہ کھڑا کردیا

لاہور(نیوز ڈیسک) پاکستان کے مایہ ناز سابق فاسٹ باؤلر شعیب اختر نے نیا پنڈورا باکس کھول دیا ہے جن کا دعویٰ ہے کہ ان کے علاوہ باقی سب ہی میچ فکسر تھے اور وہ 11 نہیں بلکہ 22 کھلاڑیوں کیخلاف کھیلتے تھے۔تفصیلات کے مطابق ایک انٹرویو میں شعیب اختر نے کہا کہ ”میرے اردگرد میچ فکسرز بیٹھے ہوئے تھے اور میں 22 کھلاڑیوں کیخلاف کھیل رہا ہوتا تھا، 11 مخالف ٹیم کے کھلاڑی اور 10 اپنی ٹیم کے کھلاڑی، کوئی پتہ نہیں کہ کون سا میچ فکسر ہے اور کون کیا کر رہا ہے، آصف نے مجھے بتایا کہ کون کون سے میچ فکس کئے اور کیسے کئے، تو میں نے کہا کہ ایک میچ میں

تو میں بھی تھا، میں کیا کر رہا تھا؟ وہ کہنے لگا کہ آپ ملنگ آدمی ہیں سر، آپ اپنا زور لگا رہے تھے، ہم اپنا زور لگا رہے تھے“۔شعیب اختر کے اس دعوے پر ایک صحافی نے اپنے ٹویٹر پیغام میں لکھا کہ ” سابق کرکٹر و دنیا کے تیز ترین فاسٹ باؤلر شعیب اختر صاحب نے نیا بھانڈا پھوڑ دیا…کہتے ہیں میرے علاوہ پاکستانی ٹیم میں ہر کوئی میچ فکسر تھا، میں 22 کھلاڑیوں کے خلاف میچ کھیلتا تھا، پائین اتنی جرات کا مظاہرہ تب کیا ہوتا تو حالات بہتر ہوتے“۔شعیب اختر کے اس انٹرویو کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی ہے اور لوگوں کی جانب سے ملے جلے ردعمل کا اظہار کیا جا رہا ہے۔