عمران خان آپ دلوں میں بستے ہیں،اب سکھ برادری نےجو آپ کیلئے کرنا ہے وہ پوری دنیا دیکھے گی، نوجوت سنگھ سدھو

کرتاپور(نیوز ڈیسک) وزیراعظم عمران خان کرتار پور راہداری کا افتتاح کرنے کیلئے گورد وارہ صاحب پہنچ گئے ہیں جہاں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے نوجوت سنگھ نے پاکستان کے وزیراعظم کا شکریہ ادا کیا اور انہیں ببر شیر قرار دیا ۔تفصیلات کے مطابق نوجوت سنگھ سدھو نے کرتار پور راہداری کے افتتاح کے موقع پر شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ خاںصاحب میں مودی صاحب کو بھی مبارک دے رہاہوں ، پھر نہ کہنا ، چاہے میری سیاسی لڑائی ہو یا میری زندگی گاندھی کے اہل خانہ کے نام ہو لیکن جو آپ نے یہ کام کیاہے میں مودی صاحب آپ کو منا بھائی ایم بی بی ایس والی جھپی بھیج رہاہوں ، مودی صاحب جھپی لے لو

، میں جھپی ڈالنے کیلئے تیارہوں ، مجھے بلاؤ گے تو میں زور دار جھپی ڈالوں گا ، یہاں پارٹیاں نہیں دیکھنی بلکہ بابے کو دیکھناہے جس نے اونچ نیچ نہیں دیکھنی ۔نوجوت سنگھ سدھو کا کہناتھا کہ سکھوں کی آواز کسی نے نہیں سنی بلکہ صرف وزیراعظم عمران خان نے سنی ، عمران خان کے احسان کو کوئی نہیں مٹا سکتا ، یہ پہلا وزیراعظم ہے جو کہ ببر شیر ہے جس نے نفع نقصان نہیں دیکھا ۔کرتاپور راہداری کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے نوجوت سنگھ سدھو نے اشعار پڑھ کر وزیراعظم عمران خان کا اظہارِ تشکر کیا۔نوجوت سنگھ سدھو نے کہا کہ سکھ قوم کی آواز بن کر بول رہا ہوں،سکھ قوم ایک فیصد ہے لیکن ان کا دبدبا 50فیصد ہے۔یہ کیا انصاف کے ایک شخص اپنے باپ کے گھر نہ آ سکے۔چار نسلیں اپنے باپ کے گھر آنے کے لیے ترستی رہیں۔72 سالوں میں سکھ برادری کی آواز کسی نے نہیں سنی ۔لیکن عمران خان جیسے نیک وزیراعظم نے یہ کام کیا۔انہوں نے کہا کہ میں شکریہ لے کر آیا ہوں،دل نذرانہ لے کر آیا ہوں۔عمران خان آپ دلوں میں بستے ہیں۔ عمران خان جیسے لوگ تاریخ بنایا کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ کیا ملے گا مار کر کسی کو،مارنا ہے تو احسان سے مار دو۔نوجوت سنگھ سدھو نے کہا کہ عمران خان !سکھ برادرای نے جو آپ کے لیے کرنا ہے وہ دنیا سیکھے گی۔سکھ دنیا بھر میں عمران خان کے ترجمان بن کر جائیں گے۔ انہوں نے کہا وزیراعظم عمران خان دلوں پر راج کرتے ہیں ، عمران خان کی خاطر میں دل کا نذرانہ لے کر آیاہوں ، سکندر نے ڈرا کر دنیا جیتی لیکن عمران خان دل دے کر دنیا جیتی ہے ، کچھ عمران خان جیسے لوگ ہوتے ہیں تو تاریخ بنایا کرتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ میں نے بڑے بڑے قائدین دیکھے لیکن ان کے دل چڑی جتنے تھے لیکن عمران خان کا دل سمندر جیساہے ۔