لندن سے آنیوالی 38ارب روپے کی رقم ملک ریاض کی نہیں بلکہ کس کی ہے، تہلکہ خیز انکشافات

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)سینئر تجزیہ کار سمیع ابراہیم نے کہا ہے کہ پاکستان میں لوٹا ہوا پیسہ واپس آنا شروع ہوچکا ہے۔ جس کی کوشش پاکستان کے تمام ادارے کررہے تھے۔سمیع ابراہیم نے کہا کہ برطانیہ کی حکومت پاکستان کو لوٹی ہوئی دولت کی ایک بڑی رقم دینے جا رہی ہے۔انہوں نے کہا پاکستان کو38ارب روپے ملنے جارہے ہیں۔ تحریک انصاف کی حکومت آتے ہی ، شہزاد اکبر نے برطانیہ حکومت سے پاکستانی کی پراپرٹی معلومات لینے کافیصلہ کیا۔حسین نواز نے فورا اپنے جائیدا دکوفروخت کردیا اور اس کیلئے رقم بھی خود ہی دی۔نیشنل کرائم ایجنسی برطانیہ کی تحقیقات کے بعد ملزمان نے اعتراف کرلیا۔ جب حکمران نیک او ر ایماندار ہو تو پیسی کی واپسی کا عمل شروع جاتا ہے۔ایف آئی اے نے ہزاروں ارب روپے کی پراپرٹی کی تفصیل لی،واجد ضیا ء تمام معاملے کی تحقیقات کررہے ہیں۔سمیع ابراہیم نے کہا میڈیا کبھی اس طرح

کی باتیں نہیں بتائے گا۔ اگر پاکستان پر قرض نہ ہوتے اور پاکستان کو سود کی ادائیگی نہ کرناپڑتی ، پاکستان کبھی خسارے میں نہ ہوتا۔ معیشت کے عالمی ادارے پاکستان کوسرمایہ کاری کیلئے بہترین قرار دے رہے ہیں۔ ایشین ڈویلپمنٹ نے پاکستان میں سرمایہ کاری میں خود ہی تین ارب ڈالر کا اضافہ کیا ہے۔ آئندہ ہمیں آئی ایم ایف کے قرضے کی ضرورت نہیں پڑے گی۔باہر سے آنے والی سرمایہ کاری ایک ارب ڈالر ہوگئی۔ سینئر تجزیہ کارکا کہنا تھا کہ حکومت تمام لوٹی ہوئی دولت واپس لانے کی کوشش رہی ہے تاہم حسین نواز سے 38ارب روپے کی واپسی ایک حکومت کی بڑی کامیابی ہے۔ سمیع ابراہیم کا دعویٰ ہے کہ حسین نواز نے جائیداد فروخت کرنے کیلئے رقم بھی خود ہی تھی۔ تاہم تحقیقات میں انہوں نے اعتراف جرم کیا اور برطانوی حکومت سے سیٹلمنٹ کی گئی، اب برطانیہ کی حکومت پاکستان کو 38ارب روپے واپس کرے گی۔