فیصل واوڈا نے فوجی بوٹ عمران خان کی ہدایت پر اٹھایا، بڑادعویٰ سامنے آگیا

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) پاکستان مسلم لیگ ن کی رہنما مریم اورنگزیب نے الزام عائد کیا ہے کہ فیصل واوڈا نے فوجی بوٹ عمران خان کی ہدایت پر اٹھایا ہے۔تفصیلات کے مطابق پاکستان مسلم لیگ ن کی رہنما مریم اورنگزیب نے وفاقی وزیر برائے آبی وسائل فیصل واوڈا کے استعفے کا مطالبہ کر دیا۔ن لیگ کی ترجمان مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ فیصل واوڈا جو بھی کرتے ہیں کہ عمران خان کے حکم پر کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ فیصل واوڈا نے عمران خان کے حکم اور ہدایات پر گھٹیا حرکت کی۔فیصل واوڈا نے جو کیا اور جو ماضی میں کرتے رہے وہ سب عمران خان کے حکم پر کیا۔واضح رہے کہ2 روز قبل وفاقی وزیر فیصل واوڈا

کی جانب سے لائیو پروگرام میں بوٹ رکھ دیا گیا جس کے بعد پیپلز پارٹی اور نون لیگ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے ان کے خلاف سخت الفاظ استعمال کئے گئے۔وفاقی وزیر کی جانب سے بات کرتے ہوئے نون لیگ اور پیپلز پارٹی کی جمہوری سیاست کے خلاف نامناسب الفاظ ا ستعمال کئے گئے اور کہا گیا کہ یہ ان کی جمہوریت ہے، انہوں نے اس بوٹ کو چاٹ کر نہیں بلکہ اس کے ساتھ لیٹ کر آرمی ایکٹ ترمیم میں ووٹ دیا ہے۔واضح رہے کہ وفاقی وزیر کی اس حرکت پر ان کے خلاف پنجاب اسمبلی میں استعفیٰ کی قرارداد پیش کی جا چکی ہے جبکہ دوسری جانب اینکر کاشف عباسی کے پروگرام کو پیمرا کی جانب سے60 دن کے لئے بند کر دیا گیا ہے۔جب کہ دوسری جانب پیمرا نے معروف اینکر پرسن کاشف عباسی پر 2 ماہ کی پابندی عائد کر دی ہے۔ پاکستان میں ٹی وی چینلز کے ضابطہ اخلاق پر عمل کروانے والے محکمے الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی نے یہ مؤقف اختیار کیا ہے کہ کاشف عباسی کے شو میں وفاقی وزیر فیصل واوڈا کی جانب سے غیر اخلاقی حرکت کی گئی جو کہ قومی ادارے کی ساخت کو نقصان پہنچانے کی کوشش ہے۔پیمرا نے جاری اعلامیے میں کہا ہے کہ 14 جنوری کو کاشف عباسی کے پروگرام میں وفاقی وزیر فیصل واوڈا نے غیر اخلاقی حرکت کی اور ”قومی ادارے“ کی شہرت خراب کرنے کی کوشش کی۔ پیمرا کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق اینکر پرسن کاشف عباسی نے مہمان کو نازیبا حرکت سے روکنے کی کوشش نہیں کی اور ان کے اس اقدام پر مسکراتے رہے۔ پیمرا کا کہنا ہے کہ ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر کاشف عباسی 60 دن کے لیے پروگرام نہیں کر سکیں گے، اور ان کے بطور تجزیہ کار کسی بھی لائو شو میں شرکت پر بھی مکمل پابندی ہو گی۔