عمران خان کو کس خاص ایجنڈے کے تحت سلیکٹ کیا گیا، وہ مقصد جس سے ہر پاکستانی لاعلم ہے

لاہور(نیوز ڈیسک)پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف نے کہا ہے کہ ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی درجہ بندی ن لیگ کی شفافیت کا ثبوت ہے، (ن) لیگ کے دور حکومت میں نوازشریف کی قیادت میں گورننس شفاف تھی، جبکہ تحریک انصاف کو اینٹی کرپشن ایجنڈے کے تحت سلیکٹ کیا گیا لیکن کرپشن بڑھ گئی ہے۔ انہوں نے اپنے ٹویٹ میں کہا کہ ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی سی پی آئی میں پاکستان کی درجہ بندی اس بات کا ثبوت ہے کہ مسلم لیگ (ن) کے دورحکومت میں نوازشریف کی قیادت میں حکومت سازی زیادہ شفاف تھی۔جبکہ تحریک انصاف کو اینٹی کرپشن ایجنڈے کے تحت سلیکٹ کیا گیا لیکن موجودہ دور میں ن لیگ کی نسبت

کرپشن بڑھ گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایسی بیان بازی کی مدت بہت کم ہوتی ہے، جس کا حقائق سے کوئی تعلق نہ ہو۔مزید برآں پاکستان مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ کو وزیراعظم عمران خان کا اعمال نامہ قرار دے دیا۔عمران صاحب اگر اخلاقی جرات ہے تو کہیں حکمران چور ہیں اِس لئے ملک کرپٹ ہے۔ عمران صاحب اگر جرات ہے تو کریں اپنا اور اپنے دوستوں کا احتساب کریں۔ مسلم لیگ(ن) کا بیانیہ سچ ثابت ہوا کہ ملک پہ مسلط عمران صاحب اور گھُس بیٹھیئے ملک کو دونوں ہاتھوں سے لوٹ رہے ہیں۔ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ عمران صاحب کے جھوٹ کے منہ پر زوردار طمانچہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں پچھلے دس سال میں اتنی کرپشن نہیں ہوئی جتنی سولہ ماہ میں ہوئی۔عمران صاحب نالائق، نااہل اور جھوٹے تو پہلے ہی ثابت ہوچکے، آج عالمی ادارے نے کرپشن کا ایوارڈ دیا ہے۔عمران صاحب پوری دنیا میں ملک کو بدنام کیا چور کہا اور آج خود کو چوری کا تمغہ اور اعزاز ملا ہے۔ دوسروں پر چور چور کی تہمتیں لگانے والے خود چور اور کرپٹ نکلے نکلے ثابت ہوگیا کہ پاکستان کی خدمت کرنے والوں کو قید کرنے کا مقصد پاکستان کو لوٹنا تھا۔عمران صاحب پوری دنیا میں ملک کو بدنام کیا چور کہا اور آج خود کو چوری کا تمغہ اور اعزاز ملا ہے دوسروں پر چور چور کی تہمتیں لگانے والے خود چور اور کرپٹ نکلے نکلے ثابت ہوگیا کہ پاکستان کی خدمت کرنے والوں کو قید کرنے کا مقصد پاکستان کو لوٹنا تھا۔