عمران خان کے بعد گورنر پنجاب بھی میڈیا سے خفا

لاہور (نیوز ڈیسک)عمران خان کے بعد گورنر پنجاب بھی میڈیا سے خفا، مجھے میڈیا کے دوست حکومت سے خفا خفا لگتے ہیں، چھوٹے چھوٹے ایشوز کو بہت بڑا بنا دیا جاتا ہے، پہلے مشیر اور وزیر ایک دوسرے پر بات کر لیتے تھے لیکن کوئی ایشیو نہیں بنتا تھا۔ تفصیلات کے مطابق ایک نجی ٹی وی چینل کو انٹر ویو دیتے ہوئے گورنرپنجاب چوہدری سرور کا کہنا ہے کہ پوری دنیا میں میڈیا اپوزیشن کا کردار ادا کر رہا ہے۔انھوں نے کہا کہ مجھے میڈیا کے دوست حکومت سے خفا خفا لگتے ہیں، چھوٹے چھوٹے ایشوز کو بہت بڑا بنا دیا جاتا ہے، پہلے مشیر اور وزیر ایک دوسرے پر بات کر لیتے تھے لیکن کوئی ایشیو نہیں بنتا تھا۔

انکا مزید کہنا ہے کہ وزیر، مشیر، ایم پی ایز، ایم این ایز بہت قابل احترام ہیں، گورنر ہاؤس کے دروازے عام عوام کے لیے کھلے ہیں، ہر ادارے میں اچھے برے لوگ ہوتے ہیں، میرٹ پر عمل درآمد کرانے اور میرٹ کی دھجیاں اڑانے والے لوگ بھی ہر ادارے میں موجود ہوتے ہیں، چند عناصر کی وجہ سے معاملات بگڑتے ہیں۔قبل ازیں گورنر پنجاب چوہدری محمدسرور نے ایف اے ٹی ایف کے پاکستانی اقدامات پر اظہار اعتماد کوپاکستان کی بڑ ی کامیابی قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ بھارت ایف اے ٹی ایف کے ذریعے پاکستان کیخلاف سازشیں کر رہا ہے مگر ہم ان کو ناکام بنا رہے ہیں۔ وہ گور نر ہائوس میں تحریک انصاف کے ایم این اے ریاض فیتانہ اور حاجی محمد رمضان کی قیادت میں ملاقات کر نیوالے وفد سمیت دیگر سے گفتگو کررہے تھے ۔گورنر پنجاب چوہدری محمدسرور نے کہا تھا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ بھارت ہمیشہ سے پاکستان کو کمزور کر نے کی سازشیں کر رہا ہے مگرہم سفارتی اور دفاعی محاذ سمیت ہر محاذ پر بھارت کو ناکام بنا رہے ہیں۔ اُنہوں نے کہا تھا کہ بھارت کی تمام تر سازشوںکے باوجود فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کا پاکستان کی جانب سے منی لانڈرنگ اورٹیررفنانسنگ اور دیگر شعبوں میں اقدامات پر اعتماد کا اظہار کر رہا ہے الحمد اللہ حکومت کی کامیاب پالیسوں اور حکمت عملی کی وجہ سے پاکستان ہر شعبے میں مضبوط اور مستحکم ہو رہا ہے تمام ادارے ملکی مفاد کے تحفظ کیلئے متحد ہیںاداروں میں اصلاحات کیلئے وزیر اعظم عمران خان کی قیادت میں حکومت نے جو اقدامات کیے ہیں ماضی میں انکی کوئی مثال نہیں ملتی۔اُنہوں نے کہا تھا کہ ملکی مفاد میںاہم امور پراپوزیشن حکومت کیساتھ ایک پیج پر آنے

سے جمہوریت اور پار لیمنٹ مضبوط ہو رہی ہے حکومت اور اپوزیشن میں اتفاق رائے سے ملکی ترقی اور خوشحالی کی رفتار مزید تیز ہوگی الیکشن کمشنر اور ممبران کی نامزدگی کے معاملے بھی اپوزیشن نے بہتر رویہ اپنا یا جو خوش آئند ہے۔گورنر پنجاب نے کہا تھا کہ اختلاف رائے جمہوریت کا حسن ہے مگر سیاسی جماعتیں متفق ہیں کہ پاکستان کو اتفاق رائے سے آگے لے کر چلنا ہے۔اُنہوں نے کہا تھا کہ معاشی لحاظ سے پاکستان کو بہت سے چیلنجز ہیں مگر مجھے یقین ہے کہ وزیر اعظم عمران خان کی قیادت میں حکومتی معاشی ٹیم جو اقدامات کر رہی ہے ان کے ذریعے پاکستان کو معاشی اور دیگر مسائل سے مکمل نجات ملے گی پاکستان معاشی طور پر مزید کامیابی سے آگے بڑ ھے گا اورپاکستان میں ترقی اور خوشحالی کیساتھ ساتھ روزگارکے مواقعے بھی میسر آئیں گے۔ اُنہوں نے کہا تھا کہ دہشت گردی ،کر پشن اورمعاشی سمیت تمام مسائل کا خاتمہ بھی ملک وقوم کیلئے لازم ہے جس پرکسی قسم کا کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائیگا۔