یہ کیا بکوا س ہے، میں تو زندہ ہوں،دانش کنیریا

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)مقبول ڈرامہ ‘میرے پاس تم ہو’ کی آخری قسط نے سوشل میڈیا پر مقبولیت کے ریکارڈ توڑ دئیے ہیں۔ مداح اپنے اپنے انداز میں ڈرامہ کے اختتام پر دلچسپ اور منفرد تبصرے کررہے ہیں۔ کچھ کے نزدیک ڈرامہ کا اختتام بلکل مناسب اور یادگار تھا وہیں کچھ مداح اس اختتام میں ڈرامہ کے مرکزی کردار ‘دانش’ کی ہارٹ اٹیک سے موت کو ہضم نہیں کرپارہے۔ڈرامہ کے تمام کرداروں سے متعلق مزاحیہ میمز ہر جگہ وائرل ہورہے ہیں مگر ایک صارف نے کرکٹر دینیش کنیریا کو مشکل میں ڈال دیا۔ صارف نے ایک میم شئیر کی جس پر خود دینیش کیریا کو ٹویٹ کرکے وضاحت دینا پڑی۔دینیش کنیریا نے اپنے ٹویٹ میں

لکھا، کیا بکواس ہے؟ میں ابھی زندہ ہوں ۔اس ٹویٹ کے ریپلائی میں دیگر صارفین نے میم شیئر کرنے والے صارف کے اس اقدام پر تنقید اور حوصلہ شکنی بھی کی۔ڈرامے کے اختتام اور دانش کی موت پر جو پوسٹ سب سے زیادہ وائرل ہوئی وہ وزیراعظم عمران خان کی جانب سے بولے گئے ایک جملے پر بنائی گئی میم تھی ’’دانش جانتا تھا سکون صرف قبر میں ہے۔‘‘ڈرامے کے اختتام کے بعد لوگ اس فکر میں مبتلا نظر آئے کہ ’’میرے پاس تم ہو‘‘ کے بعد اب یہ قوم کیا کرے گی؟ڈرامے کے اختتام پر ان لوگوں کو مایوسی ہوئی جو مہوش کے مرنے کا انتظار کررہے تھے لہٰذا انہوں نے اس طرح اپنا غصہ نکالا۔سوشل میڈیا صارفین نے سابق وزیراعظم نواز شریف کی بیماری اوردانش کی موت پر بھی مزاحیہ پوسٹس شیئر کیں۔ڈرامے کی مقبولیت کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ ایک مقامی چینل نے ڈرامے کے کرداردانش کی موت کی خبر اپنے چینل پر بریکنگ نیوز میں چلائی۔ ڈرامے کے حوالےسے شیئر ہونے والی پوسٹس میں سے یہ سب سے زیادہ وائرل ہونے والی پوسٹ تھی۔کسی نے ڈرامے کے اختتام پر اپنی رائے دیتے ہوئے کہا دانش نے بے انتہا پیار کیا، وفا کی، کامیاب ہوا لیکن آخر میں اس نے ثابت کردیا کہ عمران خان صحیح ہے سکون صرف قبر میں ہے۔کچھ لوگوں نے اتنا المناک اختتام لکھنے پر ڈرامے کے مصنف خلیل الرحمان قمر پر اس طرح اپنا غصہ نکالا۔