اسلام آباد کے بعد پنجاب میں بھی پلاسٹک بیگز کے استعمال پر پابندی عائد

لاہور(نیوز ڈیسک) لاہور ہائیکورٹ نے پلاسٹک بیگز کے استعمال پر پابندی لگانے کا تحریری حکم جاری کر دیا ہے۔ جسٹس شاہد کریم نے ہارون فاروق کی درخواست پر 7 صفحات پر مشتمل تحریری حکم جاری کیا۔عدالت عالیہ کے تحریری حکمنامے میں ہدایت جاری کی گئی ہے کہ پنجاب کے تمام بڑے ڈیپارٹمنٹنل سٹورز پہلے مرحلے میں پلاسٹک بیگ کا استعمال مکمل طور پر ترک کر دیں۔عدالت نے پہلے مرحلے میں پنجاب کے تمام ہول سیلرز پر پلاسٹک بیگز کے استعمال پر بھی پابندی عائد کرتے ہوئے حکم دیا ہے کہ تمام ڈیپارٹمنٹل سٹورز اور ہول سیلرز دو ہفتوں میں پلاسٹک بیگز کے متبادل انتظامات مکمل کریں۔تحریری حکم میں کہا گیا ہے کہ محکمہ تحفظ ماحول

لاہور کے تمام بڑے سٹورز کو عدالتی حکم سے آگاہ کرکے عملدرآمد رپورٹ پیش کرے۔ عدالت نے صارفین کیلئے عدالتی حکم تمام بڑے سٹورز پر نمایاں جگہ پر آویزاں کرنے کا بھی حکم دیا گیا ہے۔ اس عدالتی حکم نامے میں مٹی میں زائل ہونے والے شاپنگ بیگز کا استعمال شہر کے تمام بڑے سٹورز کیلئے لازمی قرار دیا گیا ہے۔ادھر محکمہ تحفظ ماحول کی رپورٹ کے مطابق پلاسٹک بیگز ماحولیاتی آلودگی میں اضافے کا بڑا سبب ہیں جن پر پابندی عائد کرنا لازم ہے۔ پلاسٹک بیگز پر پابندی عائد کرنے کے لئے تمام سٹیک ہولڈرز سے میٹنگز ہو چکی ہیں۔ پلاسٹک بیگز کا استعمال مکمل طور پر ترک کرنے کی تجاویز پر عملدرآمد کرنے میں تھوڑا وقت درکار ہوگا۔