عمران خان مولانا فضل الرحمن کے خلاف آرٹیکل چھ کا مقدمہ بنا کر دکھائیں

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)وزیراعظم عمران خان نے مولانا فضل الرحمان کے خلاف غداری کا مقدمہ چلانے کا اعلان کیا ہے جس کے جواب میں مولانا کے فرزند اسعد محمود نے عمران خان کو چیلنج کیا ہے کہ اپنی بات پر عمل کرکے دکھائیں۔وزیراعظم عمران خان نے جمعہ کو اسلام آباد میں صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ فضل الرحمان نے ملک کے خلاف سازش کی۔ مولانا نے خود کہا کہ وہ کسی ایجنڈے کے تحت حکومت گرانے آئے تھے۔ اس بنیاد پر ان کے خلاف آرٹیکل 6 کے تحت کارروائی کریں گے۔آرٹیکل 6 سنگین غداری کا مقدمہ ہے۔ جنرل پرویز مشرف کو بھی اسی مقدمہ میں خصوصی عدالت نے سزائے موت سنائی ہے۔

وزیراعظم کے بیان کے بعد اپوزیشن کی جانب سے اس کی مذمت کی جارہی ہے مگر مولانا فضل الرحمان کے بیٹے مولانا اسعد محمود نے اس کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان نے مولانا فضل الرحمان کے خلاف آرٹیکل چھ کے تحت مقدمہ قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور پوری قوم کے سامنے یہ بات کہی ہے۔ مطالبہ کرتا ہوں کہ اب آپ اپنے اس دعوے پر قائم رہیں اور اپنے بات سے پیچھے نہ ہٹیں۔مولانا اسعد محمود نے کہا کہ عمران خان جس آئین کے تحت مولانا فضل الرحمان پر غداری کا مقدمہ بنانا چاہتے ہیں، اس آئین کو ہمارے آباد و اجداد نے بنایا۔ اس پر ان کے دستخط ہیں اور ہم اس آئین کی حفاظت کرنا جانتے ہیں۔دوسری جانب بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ اس طرح کے مقدمات بنانا حکومت کا چھوٹا پن ہوگا۔مسلم لیگ نواز کے صدر اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف میاں شہباز شریف نے فضل الرحمان کے خلاف غداری کا مقدمہ چلانے کے بیان کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ عمران نیازی کو بیان دینے سے پہلے آئینہ دیکھنا چاہیے۔وزیراعظم عمران خان نے جمعہ کو اسلام آباد میں صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ فضل الرحمان نے ملک کے خلاف سازش کی۔ مولانا نے خود کہا کہ وہ کسی ایجنڈے کے تحت حکومت گرانے آئے تھے۔ اس بنیاد پر ان کے خلاف آرٹیکل 6 کے تحت کارروائی کریں گے۔آرٹیکل 6 سنگین غداری کا مقدمہ ہے اور جنرل پرویز مشرف کو بھی اسی مقدمہ میں سزائے موت ہوئی ہے۔وزیراعظم کے بیان کے بعد اپوزیشن کی جانب سے اس کی مذمت کی جارہی ہے۔ اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے کہا کہ عمران نیازی کو بیان دینے سے پہلے آئینہ دیکھنا چاہیے۔ وہ خود حکومت گرانے کیلئے طویل دھرنے دے چکے ہیں۔انہوں نے کہا کہ

حادثاتی لیڈروں کا یہی المیہ ہے کہ وہ تاریخ سے واقف نہیں ہوتے۔ فضل الرحمان اس شخصیت کے فرزند ہیں جس نے پاکستان کا آئین بنایا۔ ترک صدر کے دورہ پاکستان کے موقع پر عمران نیازی کا بیان قابل افسوس ہے۔مسلم لیگ نواز کے رہنما رانا ثنا اللہ نے سما سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حکومت شوق سے فضل الرحمان پر آرٹیکل چھ کا مقدمہ بنائے۔ مولانا نے جو بات کہی، وہ ہم نے بھی سنی ہے۔۔ ساری دنیا کے سامنے ہے۔ اس میں ایسی کوئی بات نہیں جسے قومی سلامتی کے خلاف سمجھا جاسکے یا جس کی بنیاد پر آرٹیکل چھ کا اطلاق کیا جائے۔مسلم لیگ نواز کے پارلیمانی لیڈر خواجہ آصف نے کہا کہ عمران خان آخر اس

ریاست کے ساتھ کیا کرنا چاہتے ہیں۔دریں اثنا وفاقی وزیر فواد چوہدری نے اپنے ٹوئیٹر پیغام میں کہا کہ مولانا فضل الرحمان نے اعتراف کیا کہ انہوں نے حکومت گرانے کی سازش کی اور نادیدہ قوتوں کا کاندھا استعمال کیا۔ اسی لیے مولانا کے خلاف بغاوت کا مقدمہ ہونا چاہئے جو بالکل درست ردعمل ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ جے یو آئی کا پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ سے فنڈنگ کا جھگڑا ہے ورنہ یہ سب ایک ہیں۔