پاکستان میں پہلی مرتبہ بجلی سے چلنے والی گاڑی متعارف

کراچی(نیوز ڈیسک)کراچی سے تعلق رکھنے والی ایک کمپنی کراؤن گروپ نے پاکستان میں بجلی سے چلنے والی گاڑیاں متعارف کرائی ہیں۔کراؤن گروپ کی جانب سے گزشتہ روز ماحول دوست گاڑیاں، موٹر سائیکلز، آٹو رکشے اور ایمبولینسز نمائش کےلیے پیش کی گئیں۔ یہ گروپ 1963 سے ملک میں آٹو پارٹس بنا رہا ہے۔بجلی سے چلنے والی گاڑی کی قیمت 4 لاکھ روپے ہے جس میں دو افراد کے بیٹھنے کی جگہ ہے جبکہ دروازے بھی دو دیے گئے ہیں۔ اس کے علاوہ رکشہ کی قیمت 2 لاکھ اور موٹرسائیکل کی قیمت 55 ہزار روپے ہے۔کراؤن گروپ کے مطابق کمپنی کی تیار کردہ گاڑیاں ایک کلومیٹر کا فاصلہ 1 روپے 25 پیسے میں طے کرے گی جوکہ سب سے سستی ٹرانسپورٹ ہوگی۔گروپ کے چیئرپرسن فرحان حنیف کہتے ہیں کہ دو اور تین

پہیے والی آٹو موبائلز مکمل چارج ہونے پر 60 سے 70 کلومیٹر کا سفر طے کرے گی جبکہ گاڑی 50 اے ایم پی کی بیٹری پر مکمل چارج ہونے پر 50 کلومیٹر کا سفر کرے گی۔چیئرپرسن نے مزید کہا کہ مشترکہ منصوبے میں چین کی 8 کمپنیوں نے کراؤن گروپ کے ساتھ شراکت کی ہے۔ یہ بھی کہا کہ حکومت اگر اپنی برقی گاڑیوں کی پالیسی کو لاگو کرتی ہے تو کمپنی پیداوار کو بڑھانے کےلیے تیار ہے۔پالیسی کا مسودہ حکومت کی منظوری کا منتظر ہے۔چیئرپرسن نے یہ بھی کہا کہ حکومت اپنی بات پر قائم رہی تو آٹو پارٹس کی درآمد پر کسٹم ڈیوٹی صرف 1 فیصد ہوگی اور سیلز ٹیکس 5 فیصد سے زیادہ نہیں ہوگا۔کراؤن گروپ نے مینوفیکچرنگ پلانٹ کی تیاری میں 20 لاکھ روپے خرچ کیے ہیں جبکہ برقی گاڑیوں کی مارکیٹ میں کمپنی کا یہ پہلا قدم ہے۔