اسٹیٹ بینک کا عوام کو جراثیموں سے پاک نوٹ فراہم کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے کورونا وائرس کے جراثیم سے پاک نوٹ فراہم کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق کورونا وائر س سے بچاؤ کیلئے ملک بھر میں لاک ڈاؤن کے بعد سٹیک بینک کی جانب سے بھی بڑا اقدام اٹھا لیا گیا ہے۔ سٹیٹ بینک کی جانب سے نجی بینکوں کو ہدایات جاری کی ہیں کہ عوام کو جراثیم سے پاک نقدی فراہم کی جائے ۔ہسپتالوں اور کلینکس سے آنے والی نقدی کے نوٹوں میں شامل ہونے سے کورونا وائرس آگے منتقل ہو سکتا ہے۔ اس لئے ضروری ہے کہ عوم کو جراثیم سے پاک نوٹ فراہم کئے جائیں۔ ہسپتال اور کلینکس سے آنےو الے نوٹوں کی سرکولیشن کو فلحال روکنے کا فیصلہ

کیا گیا ہے اور جراثیم سے پاک کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ تاہم ہدایات جاری کی گئی ہے کہ اے ٹی ایم سمیت عوام کو نقد فراہم کئے جانے والےنوٹ جراثیم سے پاک ہونے چاہیے۔ سٹیٹ بینک کے اس ا قدام کا مقصد شہریوں کو کورونا وائرس جیسی مہلک بیماری سے بچانا ہے۔ اس سےقبل اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے طویل مشاورت کے بعد موجودہ حالات کے پیش نظر شرح سود میں مزید کمی کر دی کر دی تھی ۔ اسٹیٹ بینک نے ایک ہفتے کے دوران دوسری مرتبہ شرح سود میں کمی کی ہے۔ مرکزی بینک کی جانب سے 17 مارچ کو شرح معمولی کمی کے بعد 12.50 فیصد کی گئی تھی۔جبکہ اب پاکستان کے مرکزی بینک نے شرح سود مزید ڈیڑھ فیصد کم کر دی ہے۔ یوں اب شرح سود 11 فیصد پر آگئی ہے۔ اس سے قبل موجودہ حالات کے تناظر میں وزیراعظم نے بھی معاشی پیکج کا اعلان کیا۔ انہوں نے معاشی ٹیم کے اجلاس کے بعد سینئر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں کنفیوژن پھیلی ہوئی ہے کہ پتا نہیں کیا ہوجائے گا، لیکن میں بتا دوں کہ ہمیں خطرہ کورونا سے نہیں بلکہ خوف سے غلط فیصلے کرنے سے ہے۔