کسی کوکورونا وائرس ہے تو یہ آسان نسخہ استعمال کرے، صبح وائرس ہواتو انشاء اللہ رات کو ختم ہوجائیگا

سینا مکی کورونا کے علاج میں معاونت کرسکتی ہے، چیئرمین سائنس اینڈ ٹیکنالوجی ٹاسک فورس ڈاکٹر عطا الرحمن، مولانا بشیر فاروقی اورڈاکٹر نذیر نے دعویٰ کر دیا ۔ تفصیلات کے مطابق چیئرمین سائنس اینڈ ٹیکنالوجی ٹاسک فورس ڈاکٹر عطا الرحمن نے کہا ہے کہ سینا مکی میں اینٹی باڈیز کی ایکٹویٹی پائی گئی ہے، اس سے فلو کا موثر علاج ہو سکتا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ میں خود اس پر ریسرچ کر چکا ہوں اگر کسی شخص کو گلے کا مرض ہے تو اس کے لیے موثر ثابت ہو سکتی ہے تاہم کورونا کے لیے اس کے موثر ہونے کے حوالے سے ابھی تک کچھ کہا نہیں جا سکتا۔ ان کاکہنا تھا کہ سینا مکی کو استعمال کرنے میں کوئی حرج نہیں ہے۔

علاوہ ازیں مولانا بشیر فاروقی نے حدیث کا حوالے دیتے ہوئے مہفوم بتایا کہ حضور ﷺنے فرمایا کہ اگر موت کا علاج ہوتا تو سینا مکی میں ہوتا۔ڈاکٹر بشیر فاروقی نے اس مرکب کو بنانے کا طریقہ بتاتے ہوئے کہا کہ پانی کو بوائل کرکے اس میں تھوڑی سے سینا مکی ڈال دی جائے اور پکنے دیں ، ان کا کہنا تھا کہ اگر کسی کو صبح کورونا وائرس ہوا ہے تو ان شا اللہ سینا مکی کے استعمال سے رات کو یہ وائرس ختم ہو جائے گا۔ ان کاکہنا تھا کہ یہ علاج نبی کریمﷺ نے عطا کیا ہے ۔ اس حوالے سے ڈاکٹر نذیر نے کہا ہے کہ سینا مکی سے کورونا وائرس کے مریض کا 24 گھنٹے میں علاج ہو سکتا ہے ساتھ ہی ساتھ یہ وزن کم کرنے کے لیے بھی انتہائی موثر ہے۔ واضح رہے اس سے قبل بھی مذہبی شخصیات سینا مکی کی افادیت کے حوالے سے دعویٰ کر چکے ہیں ۔